کئی دن گزرجانے کے باجود ڈاکٹر عادل خان شہید کے قاتلوں اور گستاخ صحابہ کی عدم گرفتاری لمحہ فکریہ ہےعلماء کمیٹی کراچی

ئی دن گزرجانے کے باجود ڈاکٹر عادل خان شہید کے قاتلوں اور گستاخ صحابہ کی عدم گرفتاری لمحہ فکریہ ہےعلماء کمیٹی کراچی کا اہم اجلاس جامعہ رحمانیہ کشمیرروڈ میں منعقد ہوا جس میں علماء کمیٹی کے اراکین مولانا اورنگزیب فاروقی ،مولانااقبااللہ ،مولاناطلحہ رحمانی،قاری عثمان،مولانا تاج حنفی ، مولانا رب نواز حنفی ،مولانافیضان ،قاری اللہ داد، مولانا حماد مدنی ،مولانا اللہ یار سمیت دیگر علمائے کرام نے شرکت کی جس میں مولانا ڈاکٹر عادل خان شہید کے قاتلوں اور گستاخ صحابہ کی عدم گرفتاری پر شدید تشویش کا اظہار کیا گیا علماء کمیٹی کے رہنماؤں نے کہا کہ کہیں دن گزر جانے کے باوجود قاتلوں کی اور گستاخی کرنے والوں کاگرفتار نہ ہونا انتظامیہ کی نا اہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے کہ سی سی ٹی وی فوٹیج اوردیگرثبوتوں کے باجودتاحال قاتلوں کو گرفتار نہ ہونا سوالیہ نشان حکومت قاتلوں اور گستاخوں کی عدم گرفتاری میں غفلت کا مظاہرہ نہ کریں رہنماؤں نے مزید کہا کہ قائد اعظم کے مزار کی بے حرمتی کرنے والوں کو گرفتار کرنا اور گستاخ صحابہ کو گرفتار نہ کرنا لمحہ فکریہ ہےسابق صدر مشرف پر حملہ کرنے والے والوں کو گرفتار کرکے پھانسی دے سکتے ہیں جبکہ علماء کرام کے قاتلوں اور گستاخوں کی عدم گرفتاری سے عوام اور نوجوانوں میں شدید اشتعال پایا جا رہا ہے اگر اس کا سدباب نہ کیا گیا تو ریاستی اداروں پر اعتماد ختم ہو جائے گا علماء کمیٹی کی اپیل پر کامیابی ہڑتال کے بعد احتجاج کا سلسلہ جاری رکھنے کا فیصلہ ہوا ہے جس کا لائحہ عمل جمعہ کوہونے والے اجلاس میں کیا جائے گا گستاخوں کی عدم گرفتاری تک یہ تحریک جا ری رہے گی
ترجمان کراچی علمإ کمیٹی

Facebook Comments

POST A COMMENT.